ساہیوال، کالعدم تنظیموں پرقربانی کی کھالیں اکٹھی کرنے پر پابندی

ساہیوال(بیورورپورٹ)کالعدم اورزیر نگرانی تنظیوں پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے پر مکمل پابندی ہے خلاف ورزی کی صورت میں بھرپور قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔کالعدم تنظیمیں قربانی کی کھالیں اکٹھی کرنے کے لئے اپنے کیمپ نہیں لگا سکتیں اورجوکوئی بھی ان کو کھالیں دینے یاان کے لئے جمع کرنے میں ملوث پایا گیا اس کے خلاف بھی سخت ایکشن لیا جائے گا ۔کالعدم تنظیموں کو کسی بھی قسم کی معاونت،مالی امداد یا سہولیات فراہم کرناقانونا جرم ہے یہ بات ڈسٹرکٹ پولیس آفیسرساہیوال غلام مبشر میکن نے عید الاضحی کے حوالے سے جاری اپنے بیان میں کہی۔ عوام ملکی سلامتی کے مشن میں ہمارا ساتھ دیں آپ کے عطیات خیرات اور کھالیںصرف مستحق افراداورفلاحی اداروں کا حق ہے انہیں دینے سے پہلے اچھی طرح اطمینان کرلیں کہ آپ کی کھالیں/ رقوم کہیں دہشت گردی میں ملوث ہاتھوں میں تو نہیں جارہی ہیں۔اس سلسلہ میں تمام ایس ڈی پی اوزاور ایس ایچ اوزکو سخت ہدایات جاری کر دی گئی ہیںکہ وہ خصوصی طور پر اپنے علاقہ کی مساجد میں اعلانات کروائیں اور امن کمیٹی کے ممبران ،معززین ،نمبرداران ،چیئرمین /وائس چیئرمین اور کونسلرز حضرات کے ساتھ میٹنگز کریں اور ان کوگورنمنٹ آف پنجاب کی طرف سے جاری کردہ قربانی کی کھالوں کے حوالہ سے ہدایات کے بارے میں آگاہ کریں کہ کسی بھی کالعدم تنظیم کو قربانی کی کھالیں اکٹھی کرنے کی اجازت ہر گز نہیں ہوگی۔اگر کسی بھی کالعد م تنظیم یا اس کے کارکنان کی طرف سے قربانی کی کھالیں اکٹھی کی جائیں یا کسی ایسی تنظیم ،مدرسہ جس کے پاس مجاز اتھارٹی کا اجازت نامہ نہیں ہو گاتو ان کے خلاف فوری قانونی کاروائی عمل میںلائی جائے۔قربانی کی کھالیں صرف وہ تنظیمیں ،ادارے،مدرسے اکٹھی کرسکتے ہیں جن کے پاس مجاز اتھارٹی ساہیوال کی طرف سے جاری کردہ 2018 کا تحریری اجازت نامہ ہو گا ۔اس کے علاوہ کھالوں کی خریدو فروخت کرنے والے تاجر /دوکان داراس بات کو یقینی بنائیں گے کہ کھالوں کی خرید و فروخت کے حوالے سے ان کے پاس مجاز اتھارٹی کا اجازت نامہ موجودہو۔انہوں نے مزید کہاکہ عید الاضحی کی آمد کے پیش نظر بیوپاریوں اورمویشی منڈیوں کی سکیورٹی کوبھی یقینی بنایا جائے اور اس ایریا میں موثر گشت کو یقینی بنایا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں