شہری پر تشدد، پی ٹی آئی کا عمران شاہ کو شوکاز نوٹس

کراچی(ایس این این ) کراچی میں تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی ڈاکٹر عمران علی شاہ کی جانب سے شہری کو تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے معاملے پر ڈی آئی جی ایسٹ ڈاکٹرعامر فاروقی نے تحقیقات کا حکم دے دیا، ان کا کہنا تھا کہ واقعہ کی تمام تر پہلوؤں سے تحقیقات کرکے کارروائی عمل میں لائی جائے گی اور ذمہ داران کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔تحریک انصاف کے ایم پی اے کے تشدد کا شکار ہونے والے متاثرہ شخص کا کہنا ہے کہ بیٹی اسپتال میں داخل ہے اور اہلخانہ کے ساتھ تیمارداری کے لئے جارہا تھا، اسٹیڈیم کے قریب بمپر ٹو بمپر گاڑیاں چل رہی تھیں اس وجہ سے میری گاڑی کا بمپر اگلی گاڑی سے ٹکرایا، میری ان سے بات ہورہی تھی کہ اچانک عمران شاہ آگئے اور تشددشروع کردیا۔
متاثرہ شخص نے کہا کہ پی ٹی آئی کے عمران شاہ نے میری ایک نہ سنی اور آتے ہی تشدد شروع کردیا، یہ کونسا ملک ہے جہاں شہری کی عزت کو تار تار کردیا جاتا ہے۔ادھر عمران علی شاہ نے اپنے وضاحتی بیان میں کہا کہ میں غیر مشروط طور پر معافی مانگتا ہوں، دراصل وہ شہری ایک اور گاڑی والے کو مسلسل تنگ کر رہا تھا، میں نے گاڑی روک کر اسے ایسا کرنے سے منع کیا، گاڑی والا مجھے گالیاں دے رہا تھا جب کہ میں نے مارا نہیں اسے دھکا دیا۔دوسری جانب تحریک انصاف نے بھی نومنتخب رکن صوبائی اسمبلی کو اظہار وجوہ کا نوٹس بھیج دیا اور ان سے شہری پر تشدد سے متعلق 24 گھنٹے میں وضاحت طلب کرلی۔ نوٹس میں کہا گیا کہ اگر عمران علی شاہ نے وضاحت پیش نہ کی تو معاملہ انضباطی کمیٹی کے حوالے کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں