ساہیوال، پولیس لائنز میں یوم شہدائے پولیس کی تقریب کا انعقاد

ساہیوال ایس این این )ریجنل پولیس آفیسر ساہیوال رینج شارق کمال صدیقی نے کہا ہے کہ شہداء پولیس معاشرے کا جھومر ہیں جنہوں نے اپنی لازوال قربانی سے عوام کی جان و مال کا تحفظ یقینی بنایا اور اپنے حلف کی پاسداری کی -پولیس کے جوانوں کا مورال بلند رکھنے کے لئے ضروری ہے کہ معاشرہ ان کو عزت دے تا کہ بدلے میں وہ آپ کی جان و مال کی حفاظت کے لئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے سے دریغ نہ کریں -وہ یہاں قومی یوم شہدائے پولیس دن کے حوالے سے شہداء کے ورثاء کے اعزاز میں منعقد ہ تقریب سے خطاب کر رہے تھے جس میں کمشنر ساہیوال ڈاکٹر فرح مسعود ،ڈپٹی کمشنر محمد زمان وٹو ،ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج رانا مسعود اختر اور ایس پی انویسٹی گیشن چوہدری سجاد احمد کے علاوہ شہداء کے لواحقین نے بڑی تعداد میں شرکت کی -انہو ںنے کہا کہ پنجاب پولیس کے 1409شہداء کی قربانیاں اس امر کی غماض ہیں کہ پولیس فورس نے صوبے میں عوام کو تحفظ کا احساس دلانے کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کیا اور آگے بڑھ کر سماج دشمن عناصر کی سرکوبی کی -انہو ںنے بتایا کہ ساہیوال ڈویژن سے 74پولیس افسران و اہلکاروں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے جس میں 24ضلع ساہیوال ،36اوکاڑہ اور 14ضلع پاکپتن سے ہیں جن کے لواحقین کی کفالت پولیس کی ذمہ داری ہے -انہوں نے کہا کہ معاشرے ایسی جنگ سے دوچار ہیں جس میں پولیس کے ساتھ ساتھ عوام نے بھی جانوں کا نذرانہ پیش کیا -آر پی او شارق کمال صدیقی نے کہا کہ معاشرے کو بے شمار اندورنی و بیرونی چیلنجز کا سامنا ہے جس کا مقابلہ پولیس اور معاشرے نے مل کر کرنا ہے -تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کمشنر ڈاکٹر فرح مسعود نے شہداء کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ لواحقین کی کفالت معاشرے پر قرض ہے جنہوں نے معاشرے کو تحفظ اور عوام کو ذہنی سکون دینے کے لئے قربانی دی -تقریب کے اختتام پر ضلع ساہیوال کے تمام 24شہداء کے لواحقین کو پھول اور تحائف بھی پیش کئے گئے-

اپنا تبصرہ بھیجیں