سرکاری ہسپتالوں میں کمپیوٹرائزڈ پرچی سے عوامی مشکلات میں اضافہ

ساہیوال(ایس این این )سرکاری ہسپتالوں میں علاج معالجہ کیلئے کمپیوٹر پرچی مریضوں کیلئے وبال جان بن گئی ‘پرچی کیلئے گھنٹوں دھوپ میں کھڑے ہونے اور پرچی لنے کے بعد چیک اپ کیلئے گھنٹوں آئوٹ ڈور کے باہر انتظار کرنے سے شہری پریشان‘ پرچی لینے کا طریقہ کار آسان بنا یا جائے۔ تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ حاجی عبدالقیوم ہسپتال میںشہری علاج معالجہ کیلئے آتے ہیں تو انہیں کمپیوٹر پرچی لینے کیلئے گھٹنوں لائن میں دھوپ میں کھڑے ہونا پڑتاہے ۔ مردوخوا تین کیلئے الگ الگ لمبی لائنیں لگنے سے پرچی تاخیر سے ملتی ہے جب آئوٹ ڈور کے باہر چیک اپ کیلئے جاتے ہیں تو وہاں بھی لمبی لائن لگی ہوتی ہے لیکن پرچی دینے والا عملہ انتہائی کم ہے اور آئوٹ ڈور میںبھی ڈاکٹر کی کمی ہے۔ اس طرح ڈسٹرکٹ ہسپتال میں بھی یہی سلسلہ جاری ہے۔ دھوپ میں کھڑے ہونے والے مردوخواتین انتہائی پریشان ہوجاتے ہیں۔ پرچی دینے والے سفارشی حضرات کوپرچیا ں بناکر دیتے رہتے ہیں انہیںاگر کوئی کہے تو وہ بدتمیزی بھی کرتے ہیں۔ شہریوںنے متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ پرچی لینے کاطریقہ کار انتہائی آسان بناکر مریضوںکو ریلیف دیاجائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں