موجودہ حکمران ناکام ہو چکے ہیں:‌اکرام الحق

ساہیوال(ایس این این )متحدہ مجلس عمل ساہیوال کے راہنمااور امیدوار جماعت اسلامی پی پی 197ساہیوال چوہدری اکرام الحق ایڈووکیٹ نے کہاہے کہ 50ہزارکرپٹ افرادکااربوں روپے ہڑپ کرناتشویشناک امر ہے ان کے خلاف کارروائی کی جائے۔ایک طرف ٹیکس چور قومی خزانے کو بڑانقصان پہنچارہے ہیں جبکہ دوسری جانب حکومت ایمنسٹی اسکیم کی ڈگڈگی لیے بیٹھی ہے۔موجودہ حکمران عملاً ناکام ہوچکے ہیں۔ملکی معیشت زبوں حالی کاشکار ہے۔عوام کو کسی قسم کا ریلیف میسر نہیں۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ساہیوال میں عوامی وفود سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔انہوں نے اشٹام فروشوں کے مسائل پر گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ موجودہ حکومت نے100روپے والااشٹام منسوخ کرکے1200روپے والا اشٹام اقرارنامہ بیع کے لیے مقررکیا ہے اور1200روپے والااشٹام پیپر،اشٹام فروش رکھنے کامجازنہ ہے۔پنجاب بینک سے مہیا کیاجاتاہے۔اس شرح سے کوئی چیزبھی نہیں بڑھی پھراشٹام کی شرح اتنی کیوں بڑھائی گئی ہے جبکہ رجسٹری یاانتقال کے وقت حکومت بھاری فیس لے لیتی ہے تو اس بات کاکیاجوازہے۔انہوں نے کہاکہ حکومت نے20روپے والا اشٹام بند کرکے50روپے کے اشٹام پر بیان حلفی تحریر کرنے کاآرڈیننس جاری کیا ہے جبکہ خزانہ میں 50اور100روپے والااشٹام ایک مدت سے نہیں بھیجا جارہا۔بیان حلفی کے لئے مجبوراًاشٹام فروشوں کو150 یا 200روپے والااشٹام پیپرلگاناپڑرہاہے جوکہ عوام الناس پر انتہائی ظلم ہے۔انہوں نے کہاکہ اشٹام فروشوں کو اشٹاموں کی خریداری کے وقت صرف5فیصدرعایت کی جاتی ہے جبکہ دفترخزانہ کے چکرلگانے اوراشٹام ارجنٹ حاصل کرنے پر اشٹام فروشوں سے اس سے زیادہ رشوت لے لی جاتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں